پاکستان کی بیٹنگ لائن ایک بار پھر فلاپ ہو گئ،

جنوبی افریقا کے خلاف کیپ ٹاؤن ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں پاکستان کی پوری ٹیم 177 کے مجموعی اسکور پر پویلین لوٹ گئی۔

کیپ ٹاؤن ٹیسٹ میں جنوبی افریقی کپتان فاف ڈپلوسی نے ٹاس جیت کر پہلے پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی، تو ایک مرتبہ پھر قومی ٹیم کا ٹاپ آرڈر ناکام ثابت ہوا اور وقفے وقفے سے وکٹیں گرتی چلی گئیں۔

پاکستانی اوپنر ایک اچھا آغاز فراہم کرنے میں ناکام رہے اور 13 کے مجموعی اسکور پر فخر زمان اور امام الحق آؤٹ ہوکر پویلین لوٹ گئے۔
فخر زمان ایک رنز بنا کر ڈیل اسٹین اور امام الحق 8 رنز بنا کر فلینڈر کا شکار بنے۔
تجربہ کار بیٹسمین اظہر علی 2 کے انفرادی اسکور پر اولیویئر کا شکار بنے، اسد 20 رنز بنا کر ربادا کو اپنی وکٹ دے بیٹھے۔ بابر اعظم 2 رنز بنا کر آؤٹ ہونے والے پانچویں کھلاڑی بنے۔

یوں 54 رنز پر پاکستان کی آدھی ٹیم پویلین لوٹ چکی تھی، کپتان سرفراز اور شان مسعود نے چھٹی وکٹ کی پارٹنرشپ میں60 رنز جوڑے ، شان مسعود 44رنز بناکر پویلین لوٹ گئے، بعدازاں ساتوں وکٹ سرفراز احمد کی 156 رنز پر گری وہ 56 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، یاسر شاہ 5 اور محمد عباس صفر پر آؤٹ ہوئے، آخری آؤٹ ہونے والے کھلاڑی شاہین شاہ آفریدی تھے جو 177 کے مجموعی سکور پر صرف 3 رنز بنا کر ڈیل سٹین کا تیسرا شکار بنے۔

جنوبی افریقہ کی جانب سے اولیویئر نے چار ڈیل سٹین نے دو اور ربادا نے دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

Share Post
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اپنا تبصرہ بھیجیں