“ایس سی او” مشہ بروم میں (حمیدی سے) خصوصی کالم

کسی بھی علاقے کی ترقی کے لئے دنیا سے رابطے کی سہولت ہونا ضروری ہے- اور رابطے کے لئےاہم چیزوں میں سے دو اہم زرائع ٹیلی فون اور دوسرا روڈ ہے،
گلگت بلتستان کی تعمیرو ترقی کے لئے جنرل ایوب خان نے شاہراہ ریشم (شاہراہ قراقرم) بنایا، اس شاہراہ کے بننے سے گلگت بلتستان کی تعمیرو ترقی کا ایک نیا دور شروع ہوا- اور پھر جنرل ضیاالحق شہید نے سیاچن تک سڑکیں اور پل تعمیر کر کے عوام کے دلوں میں پاک فوج کے لئے جگہ بنایا-
سیاچن تک روڈ بنانے کے بعد پاک فوج نے ایس-سی-او کے زریعے عوام کو دنیا سے رابطے کے لئے سہولت دینے کی کوشش کی- ایس-سی-او نے دنیا سے رابطے کے لئے مختلف زرائع متعارف کرایا جن میں وائرلیس سسٹم، لینڈ لائن ٹیلی فون، WLL، ناردرن وائر لیس اور دیگر زرائع شامل ہے،
جب دنیا میں ٹیکنالوجی نے ترقی کی اور پاکستان میں بھی موبائل فون کمپنیوں نے سروسز دینا شروع کیا اور 3G, 4G اور 5G کا چرچا ہونے لگا تو SCO نے بھی”باکمال لوگ لاجواب سروس” کا نعرہ لگاتے ہوے SCOM کے نام سے موبائل فون سروس دینے کا اعلان کیا-
دیگر کمپنیوں نے مسلم لیگ(ن) کے دور میں 3G، 4G سروس دینا شروع کیا اور 5G کے لئے کام شروع ہوا تو SCOM نے بھی آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان میں 2G سروس دینا شروع کر دیالیکن مشہ بروم میں پہلی بار اس وقت عوام نے SCO کے صلاحیتوں کا اعتراف کیا جب سانحہ گیاری کے بعد SCO نے سیاچن میں سیٹلائٹ کے زریعے سے ہنگامی بنیادوں پر موبائل سروس(SCOM) مہیا کیالیکن یہ بات ابھی تک سمجھنے سے قاصر ہےکہ دیگر کمپنیوں نے نئی ٹیکنالوجی کا استعمال کر تے ہوے اپنی ٹاورز کو سگنل دینے کے لئے کیبل ( فائبر آپٹیکل) سے نکل کر سیٹلائیٹ سسٹم اپنایا ہے لیکن SCOM نے دوبارہ کیبل (فائبر آپٹیکل) کے زریعے سے اہنے ٹاورز کو سگنل دے رہے ہیں جس کی وجہ سے کیبل کو نقصتان ہونے کی صورت میں اکثر سگنل کا پرابلم آتے رہتے ہیں-
ضلع گانگچھے کے تین سب ڈویژن ین میں سے صرف خپلو میں لینڈ لائن ٹیلی فون اور انٹرنیٹ کی سہولت ہے لیکن سب ڈویژن مشہ بروم اور سب ڈویژن ڈغونی کے عوام اس دور میں بھی ان دونوں سہولتوں سے محروم ہیں
جس کی وجہ سے عوام کو رابطے کے لئے مشکلات کا سامنا ہےتو دوسری طرف دفاتر کی کارکردگی پر بھی فرق پڑ رہا ہے-
مشہ بروم میں SCOM سروس کا آغاز چند سال پہلے ہی شروع ہوا لیکن 3G,4G اور ٹیلی فون کی سہولت میسر نہیں تھا، لیکن اسسٹنٹ کمشنر مشہ بروم جناب فہد محمود کی کوششوں سے SCO نے مشہ بروم میں لینڈ لائن ٹیلی فون اور انٹرنیٹ سروس دینا شروع کر دیا ہے، جس سے مشہ بروم کی تعمیرو ترقی کا نیا دور شروع ہو گا- اور عوام کورابطے میں آسانی اور دفاتر کی کارکردگی بھی بہتر ہوگا،
اب سب ڈویژن ڈغونی میں بھی لینڈ لائن ٹیلی فون اور انٹرنیٹ آنے کا امکان نظر آرہا ہے، موصلات کا %80 بجٹ خرچ کرنے کے باوجود بھی SCO کی ک میعار دیگر کمپنیوں کے مقابلے میں کم ہے،
ضلع گانگچھے کو سرحدی علاقہ ہونے کی وجہ سے SCO کو چاہیے کہ عوام کو مزید سہولت دیں اور SCOM کی سہولت بہتر بناتے ہو ضلع کے دیگر مقامات پر بھی ٹاور نصب کرے جن میں کونیس، خڑوکھا بلغار، نواز شریف پل سرمو، ہوشے اور لچھت کندوس وغیرہ شامل ہے.
ان ٹاورز کی تنصیب سےعوم کو رابطےمیں آسانی ھوگی اورSCO کو بھی فائدہ ہوگا کیونکہ عوام SCOکو پاک فوج کا ادارہ سمجھ کر اس کے سروس کو استعمال کرکے پاک فوج کو فائدہ پہنچانا چاہتے ہیں- بہتر سہولت دینے سے عوام کے دلوں پاک فوج کی عزت و احترام اور بھی بڑھے گا، اس میں کوئی شک نہیں اس علاقے کی تعمیرو ترقی میں خصوصآٓ تعلیم و صحت میں پاک فوج کا بڑا ہاتھ ہے-

سید مظاہر علی حمیدی
smahnews@gmail.com
آب بھی اپنے علاقے کے خبریں ہم سے شیئر کیجے- admin@baltitv.com

اپنا تبصرہ بھیجیں